Tuesday, November 29, 2011

عظیم ہو تم، عظیم ہو تم! صلیب پر مسکرانے والو

عظیم ہو تم، عظیم ہو تم 
صلیب پر مسکرانے والو! 
لہو کے قطروں کے بیج بو کر 
ہزار گلشن سجانے والو! 
اجل کی وادی میں راہیوں کو
بقا کی راہیں دکھانے والو!
خدا کا پیغام دینے والو
خودی کا بادہ لنڈھانے والو!
خوشی خوشی سب سے آگے آگے
لپک کے مشہد کو جانے والو! 
تمام جھوٹی خدائیوں کے
صنم کدوں کو گرانے والو!
تمہاری یادیں بسی ہیں دل میں
افق کے اُس پار جانے والو!

1 تبصرے:

Saqib Shah said...

جزاب اللہ۔
colourislam.blogspot.com
ثاقب شاہ

Post a Comment

السلام علیکم
اگر آپ کو یہ مراسلہ اچھا یا برا لگا تو اپنے قیمتی رائے کا اظہار ضرور کیجیے۔
آپ کے مفید مشوروں کو خوش آمدید کہا جائے گا۔